Ispaghol: Fawaid, Nuqsanat, Istemal Ka Tarika

اسپغول - isabgol ke chilke ke fayde ke sath sath ispaghol ke nuqsanat psyllium husk side effects aur istemal ka sahi tarika janeay

Ispaghol: Fawaid, Nuqsanat, Istemal Ka Tarika

اسپغول ایک پلانٹاگو اوواٹا نامی پودے سے اخذ کیا جاتا ہے۔ اسپغول انگریزی میں سائیلیم کہلاتا ہے۔ اسپغول کا استعمال صدیوں سے چلا آ رہا ہے۔ آج کے سائنسی دور میں کی گئ تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ اسپغول کے استعمال سے قبض، اسہال، بلڈ پریشر، کولیسٹرول، بلڈ شوگر اور وزن میں کمی کو بہت فائدہ پہنچاتا ہے۔ اسپغول کا پودا زیادہ تر ایشیا میں اگتا ہے لیکن یہ دنیا بھر میں پایا جاتا ہے۔

پوری دنیا میں اسپغول کا استعمال مندرجہ ذیل بیماریوں کی روک تھام کے لیے کافی مقبول ہے۔

قبض .

ذیابیطس .

اسہال اور ڈھیلا پاخانہ .

مرض قلب .

ہائی بلڈ پریشر .

کولیسٹرول بڑھنا .

آنتوں کا ورم .

موٹاپا .

Ispaghol chilka khane ke fawaid

 

اسپغول کے فوائد تفصیلات کے ساتھ

؎

اسپغول اسہال و پیچش کو روکتا ہے اور قبض کو دور کرتا ہے۔

؎

اسپغول کا چھلکا(بھوسی) آنتوں کے زخم کیلیے بے حد مفید ہے۔

؎

اسپغول بخار کی گرمی اور پیاس کو کم کرتا ہے۔

؎

خشک کھانسی اوردمہ کے لیے روزانہ ایک چاۓ کا چمچ اسپغول دودھ یا پانی کے ساتھ کم از کم چالس روز تک پینے سے بہت فائدہ ہوتا ہے۔

؎

گرمی کی وجہ سے اگر سر میں درد ہو تو اسپغول کو ہرے دھنیے کے ساتھ پانی میں بگھو کر تھوڑی دیر کے بعد پیشانی پرلگانے سے درد دور ہو جاتا ہے۔

؎

اسپغول کو دہی میں ملا کر پینے سے پیٹ کے دیگر امراض کا خاتمہ ہوتا ہے۔

؎

اسپغول کو روزانہ اپنی خوراک میں شامل کرنے سے کولیسٹرول کو کم کرنے میں مدد ملتی ہے۔ درحقیقت کولیسٹرول کی کمی کے باعث قلبی امراض کا خطرہ نہایت کم ہو جاتا ہے۔

؎

ٹائپ ٹو ذیابیطس/شوگر والے مریضوں میں گلوکوز کو بہتر بنانے میں اسپغول اپنی مثال آپ ہے۔ گزشتہ مطالعات کا تجزیہ کرنے سے پایا گیا ہے کہ کھانے سے پہلے اسپغول لینے سے خون میں موجود گلوکوز اور گلائیکیٹڈ ہیموگلوبن میں نمایاں بہتری آتی ہے۔

؎

اسپغول وزن کو کم کرنے میں مدد فراہم کرتا ہے کیونکہ یہ جسم میں مائع جذب کرتا ہے۔ مذید اس سے آپ کو کھانے کی مقدار کو کنٹرول کرنے میں مدد مل سکتی ہے۔

 

اسپغول کے ممکنہ ضمنی اثرات/نقصانات

بعض اوقات اسپغول کے غلط استعمال یا روزانہ تجویز کردہ مقدار سے زیادہ لینے سے آپ خاص طور پر مندرجہ ذیل ضمنی اثرات کا شکار ہو سکتے ہیں۔

پیٹ میں درد .

اسہال و دست .

گیس .

بار بار پیٹ میں آنتوں کی حرکتیں .

متلی اور قے .

سانس لینے میں مشکلات .

خارش .

جلد کے دھبے .

سوجن، خاص طور پر چہرے اور گلے کے ارد گرد .

ispaghol istemal karne ka tarika

 

اسپغول استعمال کرنے کا درست طریقہ

اسپغول کی عام خوراکیں دو سے دس گرام ہیں جو دن میں کم از کم ایک بار استعمال ہو سکتی ہیں۔ اسپغول کو پانی کے ساتھ، دہی کے ساتھ یا پھر کسی بھی مشروب کیساتھ لیں اور پھر دن بھر باقاعدگی سے پانی پییں۔ آپ اسے بتدریج بڑھا سکتے ہیں اگر آپ اسپغول کے ممکنہ استعمال کو قابل برداشت محسوس کریں۔

عام طور پر اسپغول ایک چائے کا چمچ یا کھانے کا چمچ تجویز ہے۔ ڈاکٹر کی تجویز، مشورے پر عمل کرنا زیادہ بہتر ہے۔

Read in Roman Urdu / Roman Hindi

Ispaghol aik Plantago Ovata nami poday se akhaz kya jata hai. Ispaghol angrezi mein Psyllium Husk kehlata hai. Isabgol ka istemal sadiyon se chala aa raha hai. Aaj ke scientific daur ma ki gai tehqeeq se pata chalta hai ke ispaghol ke istemal se qabz, ishaal, blood pressure, cholesterol, blood sugar aur wazan mein kami (weight loss) ko bohat faida pohanchata hai. Isabgol ka poda ziyada tar asia mein ugta hai lekin yeh duniya bhar mein paya jata hai.

Poori duniya mein ispaghol ka istemal mandarja zail bimarion ki rok thaam ke liye kaafi maqbool hai:
- Qabz
- Diabetes
- Ishaal aur dhela pakhana
- Marz-e-qalb
- High blood pressure
- Cholesterol barhna
- Anton ka waram
- Motapa

ISPAGHOL KE FAWAID TAFSEELAAT KE SATH | ISABGOL KHANE KE FAYDE

1.
Ispaghol ishaal-o-paichis ko rokta hai aur qabz ko daur karta hai.
2.
Ispaghol ka chilka anton ke zakham ke liye be-had mufeed hai.
3.
Ispaghol bukhaar ki garmi aur pyaas ko kam karta hai.
4.
khushk khansi aur dama ke liye rozana aik chae ka chamach isabgol doodh ya pani ke sath kam az kam chalis roz tak peenay se bohat faida hota hai.
5.
Garmi ki wajah se agar sir ma dard ho to ispaghol ko hary dhaniya ke sath pani mein bigo kar thori der ke baad peshani par lagane se dard daur ho jata hai.
6.
Isabgol ko dahi mein mila kar peenay se pait ke degar amraz ka khtama hota hai.
7.
ispaghol ko rozana apni khoraak mein shaamil karne se cholesterol ko kam karne ma madad milti hai. Dar haqeeqat cholesterol ki kami ke baees qalbi amraz ka khatrah nihayat kam ho jata hai.
8.
Type two diabetes/sugar walay mareezon ma glucose ko behtar bananay mein ispaghol apni misaal aap ha. Guzashta mutaliaat ka tajzia karne se paya gaya hai ke khanay se pehlay ispaghol lainay se khoon mein mojood glucose aur glycated haemoglobin mein numaya behtari aati hai.
9.
Isabgol wazan ko kam karne mein madad faraham karta hai kyunkay yeh jism mein maya jazab karta hai. Mazeed is se aap ko khanay ki miqdaar ko control karne mein madad mil sakti hai.

ISPAGHOL KE MUMKINA ZIMNI ASRAAT | ISABGOL KHANE KE NUQSANAAT

Baaz auqaat ispaghol ke ghalat istemal ya rozana tajweez kardah miqdaar se ziyada lainay se aap khaas tor par mandarja zail zimni asraat ka shikaar ho satke hain.
- Pait mein dard
- Ishaal-o-dast
- Gas
- Baar baar pait mein anton ki harkatein
- Matli aur qay
- Saans lainay mein mushkilaat
- Kharish
- Jild ke dhabay
- Soojan, khaas tor par chehray aur galy ke ird gird

ISPAGHOL/ISABGOL ISTEMAAL KARNE KA DURUST TAREEQA

Ispaghol ki aam khorake 2 se 10 gram hain jo din mein kam az kam aik baar istemal ho sakti hain. Isabgol ko pani ke sath, dahi ke sath ya phir kisi bhi mashroob kay sath len aur phir din bhar baqaidagi se pani peain. Aap usay batadreej barha satke hain agar aap ispaghol ke mumkina istemaal ko qabil-e-bardasht mehsoos karen.

Aam tor par ispaghol aik chaye ka chamach ya khanay ka chamach tajweez hai. Doctor ki tajweez, mashwaray par amal karna ziyada behtar hai.