Balchar: Bal Khor - Balchar Ka Ilaj

بال خور/ بالچر - Balchar ka ilaj - bal Khor hone ke wajah - balchar ke bemari ka desi ilaj

Balchar: Bal Khor - Balchar Ka Ilaj

بال خوریا بالچرایسی بیماری ہے جس میں سر کی جلد پر چھوٹی چھوٹی ٹکڑیاں پیدا ہو جاتی ہیں جہاں سے بال گر جاتے ہیں اور نئے بال پیدا ہونا بند ہو جاتے ہیں۔ یہ بیماری سر کے ایک حصے میں بھی پیدا ہو سکتی ہے اور بہت سے حصوں میں بھی۔ بعض اوقات یہ اتنی شدت اختیار کر جاتی ہے کہ تمام جسم کے بال گر جاتے ہیں۔ پہلے یہ بیماری سر کے ایک چھوٹے سے حصے میں نمودار ہوتی ہے اور یہ حصہ بالوں سے محروم ہو جاتا ہے۔ مریض کوعموماً اس کا پتہ نہیں چلتا اور کوئی دوسرا شخص مریض کی توجہ اس کے مذکورہ بالچر کی طرف دلواتا ہے، یہ وقت بیماری کےعلاج کا بہترین وقت ہوتا ہے۔ اگراس وقت علاج شروع کر دیا جاۓ تو بیماری سے نجات کے کافی امکانات ہوتے ہیں۔ بال خور یا بالچر کا اعصابی تناؤ سے گہرا تعلق ہے۔ یہ بیماری عموماً اس وقت پیدا ہوتی ہے جب مریض ایک لمبے عرصے تک ذہنی یا جذباتی تناؤ میں مبتلا رہا ہو۔ زیادہ دماغی محنت کرنے والے لوگوں کو بھی یہ مرض لاحق ہو سکتا ہے۔ اس کےعلاوہ سر میں مسلسل درد، کھجلی یا غیر معمولی گرمی بھی اس مرض کے اسباب ہیں۔

  

balchar ka ilaj -bal khor ka desi ilaj

بال خور/ بالچر کا علاج

روزانہ متاثرہ حصے پر زیتون کے تیل کی مالش صبح، دوپہر اور شام کو کریں کیونکہ زیتون کا تیل متاثرہ حصے پر کھجلی پیدا کرتا ہے اورمفید رہتا ہے۔ دھوپ بھی متاثرہ حصے پر کھجلی پیدا کرتی ہے اس لیے مرض کے علاج کیلیے مفید ہے کہ جس قدر ممکن ہو متاثرہ حصے کو دھوپ پہنچانی چاہیۓ۔

 صحت مند بالوں کی پیدائیش کیلیے سرکی جلد میں دوران خون کا نظام ایک اہم کردار ادا کرتا ہے لہذا دوران خون کو تیز کرنے کیلیے سر کی مالش کی جاۓ۔ تیز کیمیکل والی مصنوعات کا استعمال ہرگز نہ کیا جاۓ۔

ان تمام بیان کردہ طریقوں پر باقائدگی کیساتھ عمل کرنے سے سر کے متاثرہ حصوّں میں بال پیدا ہونے لگیں گے۔ یہ یاد رکھا جائے کہ نئے پیدا ہونے والے بال بہت باریک اور کمزور ہوں گے لہذا ان بالوں کی جڑیں مضبوط کرنے کیلیے ان کو بار بار استرا (انگریزی کا تلفظ : بلیڈ) سے کٹوانا چاہیۓ۔

  

بالچر کے خاتمے کیلیے مزید ضروری ہدایات

سب سے پہلے اعصابی تناؤ کو کم کرنے کی کوشش کرنی چاہیۓ اور جسمانی صحت کو جس قدر ممکن ہو بہتر بنانا چاہیۓ۔ جسم اوراعصاب کو مناسب آرام پہنچانا چاہیۓ۔ ہررات تقریبا آٹھ گھنٹے سونا چاہیۓ۔

ذہنی تفکرات سے نجات حاصل کرنے کی کوشش کرنی چاہیۓ('ذہنی دباؤ سے نجات حاصل کرنے کا طریقہ' مضمون میں تفصیلاً اس کی وضاحت بیان کی گئ ہے)۔ صحت کیلیے مضرغذائیں اور بری عادات ترک کر دینی چاہیئں۔ تمباکو نوشی اور محرّک اشیاء کا استعمال بہت محدود کر دینا چاہیۓ اورمتوازن، غذائیت سے بھرپور خوراک استعمال کرنی چاہیۓ۔

اس سلسلے میں کھانے کا مندرجہ ذیل بیان کردہ لائحہ عمل مفید رہے گا۔

alopecia areata treatment in Urdu Hindi

ناشتے میں کیا کھائیں

تازہ یا خشک پھل استعمال کریں۔ اسکے ساتھ ساتھ ناشتے میں گندم کے خالص آٹے کی روٹی، مکھن اورایک گلاس تازہ خالص دودھ کا استعمال بالچر کی روک تھام کیلیے بہت ضروری ہے۔

دوپہر کے کھانے کی وضاحت

سبزیوں کاسوپ، معمولی سا پکا ہوا انڈا، کم مصالحہ جات میں پکی ہوئی سبزی، اور ابلے ہوۓ چاول کا استعمال کر لینا بہت فائدہ مند ہے۔

رات کے کھانے کی وضاحت

رات کے کھانے میں سبزیوں کاسوپ، تھوڑا سا سالن اور گندم کے خالص آٹے کی روٹی کا استعمال کیا جاۓ۔

Read in roman Urdu / roman Hindi

BALCHAR KIA HOTA HA

Bal khor ya balchar aise bemari hai jis mein sir ki jald par choti choti tukria paida ho jati hain jahan se baal gir jatay hain aur naye baal peda hona band ho jatay hain. Yeh bemari sir ke aik hissay mein bhi paida ho sakti hai aur bohat se hisson mein bhi. Baaz oqat yeh itni shiddat ikhtiyar kar jati hai ke tamam jism ke baal gir jatay hain. Pehlay yeh bemari sir ke aik chotey se hissay mein namodaar hoti hai aur yeh hissa balon se mahroom ho jata hai. Mareez ko umoman (usually) is ka pata nahi chalta aur koi dosra shakhs mareez ki tawajah is ke mazkoorah balchar ki taraf dilwata hai, yeh waqt balchar ki bemari ke ilaj ka behtareen waqt hota hai. Agr es waqt balchar ka ilaj shuru kar diya jae to bal khor se nijaat ke kaafi imkanaat hotay hain. Bal Khor ya balchar ka asabi tanao se gehra talluq hai. Yeh bemari umoman is waqt peda hoti hai jab mareez aik lambay arsay tak zehni ya jazbati tanao mein mubtala raha ho. Ziyada dimaghi mehnat karne walay logon ko bhi yeh marz la-haq ho sakta hai. Es ke ilawa sir mein musalsal dard, khujli ya ghair mamooli garmi bhi is marz ke asbab hain.

BAL KHOR - BALCHAR KA ILAJ

Rozana mutasirah hissay par zaitoon ke tail ki maalish subah, dopehar aur shaam ko karen kyunkay zaitoon ka tail mutasirah hissay par khujli paida karta hai aur mufid rehta hai. Dhoop bhi mutasirah hissay par khujli paida karti hai is liye balchar ke ilaj ke liye mufeed hai. Jis qader mumkin ho mutasirah hissay ko dhoop pohanchani chaheay.

Sehat mand balon ki paidaish ke liye sar ki jald mein doran-e-khoon ka nizaam aik ahm kirdaar ada karta hai, lehaza douran khoon ko taiz karne ke liye sir ki maalish ki jae. Taiz chemical wali masnoaat ka istemaal hargiz nah kya jae.
En tamam bayan kardah tareeqon par baqaedagi kay sath amal karne se sir ke mutasirah hisson mein baal paida honay lagen ge. Yeh yaad rakha jaye ke nae paida honay walay baal bohat bareek aur kamzor hon ge lehaza un balon ki jarrain (roots) mazboot karne ke liye un ko baar baar ustra (angrezi ka talafuz : blade) se katwana chaheay.

BALCHAR KE KHATMAY KE LIYE MAZEED ZAROORI HADAYAT

Sab se pehlay aasabi tanao ko kam karne ki koshish karni chaheay aur jismani sehat ko jis qader mumkin ho behtar banana chaheay. Jism aur aasab ko munasib aaraam pahunchana chaheay. Har raat taqreeban 8 ghantay sona chaheay.
Zehni tafrukrat se nijaat haasil karne ki koshish karni chaheay('zehni dabao se nijaat hasil karne ka tareeqa' mazmoon mein tafsilan is ki wazahat bayan ki gai hai). Sehat ke liye muzar aur buri aadaat tark kar deeni chahiyn. Tambaku noshi aur muharrak ashya ka istemaal bohat mehdood kar dena chheay aur ghizaiyat se bharpoor khoraak istemaal karni chaheay. 
Es silsilay mein khanay ka mandarja zail bayan kardah Laiha-amal mufeed rahay ga.

NASHTAY MEIN KYA KHAYEN

Taaza ya khushk phal istemaal karen. Es kay sath sath nashtay mein gandum ke khalis atay ki roti, makhan aur aik glass taaza khalis doodh ka istemaal balchar ki rok thaam ke liye bohat zaroori hai.

DOPEHAR KE KHANAY KI WAZAHAT

Sabzion ka soup, mamooli sa paka huwa anda, kam masala-jaat mein paki hui sabzi, aur ublay huay chawal ka istemaal kar lena bohat faida mand hai.

RAAT KE KHANAY KI WAZAHAT
Raat ke khanay mein sabzion ka soup, thora sa salan aur gandum ke khalis aattay ki roti ka istemaal kya jae.