Baal Safed Hone Ki Wajah

Umar se pehle baal safed hone ki wajah - baal jaldi safed kyu hote hai - safed baal rokne ka tarika

Baal Safed Hone Ki Wajah

خوبصورتی میں خلل پیدا کرنے كے بہت سے نکات ہو سکتے ہیں مگر ان سب وجوہات میں ایک وجہ بالوں کا سفید ہونا ہے۔ بالوں کی سفید رنگت کا ظاہر ہونا ایک نہایت اہم مسئلہ ہے۔ اس مسئلے كے پیش نظر آپ بہتر علاج تلاش کرنے كی جستجو میں گامزن ہوتے ہیں مگر بعض اوقات آپ یہ جاننے كی کوشش میں كے سفید بالوں سے چھٹکاڑا کیسے پائیں، بہت سی ایسی غلطیاں کر بیٹھتے ہیں جو كہ نہ صرف بالوں کو کمزور ، روکھا اور بے جان بنا دیتی ہیں بلکہ بالوں كی صحت اور  ناشونما  كے لیے ناگزیر ہو سکتی ہیں۔

کم عمری میں بالوں کا سفید ہونا ایک مایوس کن سبب ہے کیونکہ بڑھاپے كے ساتھ بالوں کا سفید ہونا معمولی بات ہے مگر اس كے برعکس عمر سے پہلے بال سفید ہونا پریشانی کا سبب بن جاتے ہیں۔

 

بال سفید ہونے کی وجہ

صحت مند بالوں کا انحسار ان کی اچھی نشو نما پر گامزن ہوتا ہے۔ بالوں كی اچھی نشو نما قدرتی طور پر تبھی ممکن ہوتی ہے جب بالوں كے پرانے خلیے ( فولیکلیس ) سَر کی جلد سے زائل ہوتے ہوں اور ان كی جگہ نئے خلیے پیدا ہوں جو نئے بالوں کو پیدا کرنے میں اپنا کردار ادا کرتے ہیں۔ اگر نئے خلیوں كے پیدا ہونے کا مرحلہ کمزور ہو تو بالوں میں بہت سے اہم مسائل پیدا ہونا شروع ہو جاتے ہیں۔ عمومی طور پر بھڑتی ہوئی عمر كے ساتھ ساتھ بالوں كے نئے خلیوں كی پیدائش بہت کم ہو جاتی ہے اور اکثر اوقات ختم ہو جاتی ہے۔ اس وجہ سے بالوں میں موجود روغن حتم ہونا شروع ہو جاتا ہے اور یہی وجہ بالوں كے سفید ہونے کا سبب بنتی ہے۔

umar se pehle baal safed hone ki wajah

  

بالوں میں سفیدی آنے کی وجہ بالوں میں پائے جانے والے روغن ( پیگمینٹ ) کی کمی کا واقع ہونا ہے۔ بالوں میں دو طرح كے روغن موجود ہوتے ہوں . ایک گھاڑا ( ڈارک ) جس کو یومیلانیان کہا جاتا ہا اور دوسرا ہلکا ( لائٹ ) جسے فھایومیلانین کہا جاتا ہے۔ یہ دونوں روغن آپس میں مل کر بالوں كو رنگت دینے کا کام کرتے ہیں۔ یہی وجہ ہے كہ جب بالوں میں پائے جانے والے ان دونوں بیان کردا روغن میں کمی واقعہ ہوتی ہے تو بال سفید ہونا شروع ہو جاتے ہیں۔ بالوں میں پائے جانے والے روغن میں کمی آنے کی سہی وجہ ابھی تک دریافت نہیں ہو سکی مگر اس آرٹِیکَل میں ہم آپ کو ایسے طریقے بتائیں گے جو سفید بالوں کی کمی میں منفرد ثابت ہوں گے اور بالوں كی سفیدی کو روکنے كی صلاحیت پہ مبنی ہوں گے۔

 

بالوں میں موجود روغن کو بحال کرنے كے مختلف طریقے ہیں مگر یہ وجہ پر منحصر ہے۔ قبل از وقت سفید بالوں کی عام وجوہات یہ ہیں ۔

.1

جینیات۔

کم عمری میں بالوں کا سفید ہونا اس بات كی نشانی بھی ہو سکتا ہے كہ آپ کے والدین کے بال بھی کم عمری میں سفید ہونا شروع ہو گئے تھے۔ اگر آپ اس بات پر متفق ہیں تو اس کا مطلب یہ ہے کہ سفید بال آپ کو جینیات كی وجہ سے وراثت میں ملے ہیں۔ اگرچے آپ جینیات کو تبدیل نہیں کر سکتے مگر آپ بالوں کو رنگین کر كے اپنی پسند كے مطابق بنا سکتے ہیں۔

.2

وٹامن بی -12 کی کمی۔

بالوں كی نشونما اور بالوں كی رنگت کے حوالے سے وٹامن بی-12 اہم کردار ادا کرتا ہے۔ اس كے ساتھ ساتھ وٹامن بی۔12 آپ كے جسم کو توانائی بھی فراہم کرتا ہے۔ سفید بال وٹامن بی۔12 كی کمی ہونے کے سبب پیدا ہونے لگتے ہیں۔ وٹامن بی-12 جسم میں ایک غذائی جز ہونے کا درجہ رکھتا ہے جو خون كے خولیوں کو صحت مند رکھنے کا کردار ادا کرتا ہے۔ یہ وٹامن جسم كے خولیوں کو آکسیجن فراہم کرنے كے ساتھ ساتھ بالوں كے خولیوں کو بی آکسیجن فراہم کرتا ہے۔ وٹامن بی-12 کی کمی سفید بالوں كی خاص وجہ ثابت ہو سکتی ہے۔

.3 

کیمیکل کا استعمال۔

بازار (مارکیٹ) میں دستیاب سستے شیمپو اور بالوں کو رنگ کرنے والے مصنوعات عام طور پر خطرناک کیمیکلز سے بنائے گئے ہوتے ہیں۔ ان کا استعمال نہ صرف بالوں کی جلد میں متعدی مرض (انفیکشن) کا سبب بن سکتا ہے بلکہ مستقل طور پر بالوں کو خراب کرنے میں اپنا کردار ادا کرتا ہے۔ ایسے کیمیکلز پر مبنی رنگ اور شیمپو کم وقت میں بالوں کو سفید کر سکتے ہیں۔

.4 

 تمباکو نوشی۔

کم عمری میں سفید بالوں كی ایک خاص وجہ تمباکو نوشی بھی ہے۔ ایک مطالعے(ریسرچ) كے مطابق تمباکو نوشی 30 سال کی عمر سے پہلے بالوں کو سفید کرنے میں مثبت ثابت ہوتی ہے۔ اگرچے سگریٹ پینے سے خطرناک مرض جیسے امراض قلب کا خطرہ ، پھیپڑوں کا کینسر وغیرہ جنم لیتے ہیں مگر ان كے ساتھ ساتھ بالوں کو بھی متاثر کرتے ہیں۔ تمباکو نوشی خون كی نالیوں کو سکڑنے پہ مجبور کرتی ہے جس سے شریانوں میں خون کا بہاو کم ہو جاتا ہے اور اس کے نتیجے میں صحت مند خون وقت پر بالوں تک نہیں پہنچ پاتا جس سے بال آکسیجن كی کمی کا شکار ہوتے ہوئے سفید ہونا شروع ہو جاتے ہیں۔

.5 

.تناو

اگر آپ کسی نا کسی وجہ سے ذہنی تناؤ کا شکار ہیں تو آپ كے بال قدرے وقت سے پہلے سفید ہونا شروع ہو سکتے ہیں۔ تناؤ ہونے كی بڑی وجوہات مندرجہ ذیل ہو سکتی ہیں۔

 بلند فشار خون كی بیماری ۔

 بھوک میں تبدیلی کا آنا ۔

 کسی بھی قسم کی بےچینی کا ہونا ۔

 نیند آنے میں دشواری ۔

ذہنی تناؤ ہونے كے سبب بالوں میں موجود سٹیم سیلز متاثر ہونا شروع ہو جاتے ہیں جس كی وجہ سے بالوں میں موجود روغن بننے کا عمل رک جاتا ہے اور بال سفید ہونا شروع ہو جاتے ہیں۔

.6 

ہارمونز میں عدم توازن۔

ہارمونز میں تبدیلیوں کا واقع ہونا بالوں کے سفید ہونے کو بڑھا سکتا ہے۔ جدید تحقیق كے مطابق ہارمونز میں تبدیلیاں آنے كے وجہ سے جسم میں میلانین ( بالوں اور جلد میں پائے جانے والا روغن ) کم پیدا ہونے لگتا ہے۔ میلانین كی کمی کے باعث بالوں کا سفید ہونا واضع ہے۔  اگر آپ اپنے ہارمونز كے توازن سے باخبر نہیں ہیں تو ڈاکٹر سے رجوع کریں۔

 

کیا سفید بالوں کو روکا جا سکتا ہے ؟

اگر آپ کے بال سفید ہیں اور آپ اپنے بالوں کو دوبارہ سیاہ بنانا چاہتے ہیں تو یہ مسئلہ موجودہ حالات پر انحصار کرتا ہے۔ اگر آپ كے بال جینیات كی وجہ سے سفید ہو رہے ہیں تو آپ ان بالوں کو قدرتی طور پر دوبارہ سیاہ نہیں کر سکتے۔

تاہم اگر بالوں کے سفید ہونے كی کوئی اور وجہ ہے تو بے شک آپ سفید بالوں سے چھٹکاڑا حاصل کر سکتے ہیں مگر اس بات كی ضمانت نہیں دی جا سکتی كے اس عمل میں آپ کا کتنا وقت درکار ہو گا۔

 

سفید بال روکنے کا طریقہ

سفید بالوں كی روک تھام کیلیے مندرجہ ذیل طریقے بیان کیے جا رہے ہیں جو نہ صرف سفید بال روکنے کا طریقہ ہیں بلکہ بالوں كی صحت كے لیے بھی بہت مفید ہیں۔

.1

جسم کی ضروری معدنیات کو حاصل کریں ۔

اپنی ضروری معدنیات کو بر قرار رکھنا بالوں كے لیے بہت اہمیت کا حامل ہے۔ میگنیشیم ، آئرن ، سیلینیم ، زنک اور کاپر جیسے معدنیات كی کمی کو پورا کرنے اور متوازن رکھنے سے سفید بالوں کا علاج کیا جا سکتا ہے۔

.2

تمباکو نوشی سے پرہیز کریں ۔

جیسا کے تمباکو نوشی سفید بالوں كے لیے معاون ثابت ہوتی ہے لہذا اس سے بچنے كی کوشش اپنانے اور اس عمل کو ترک کرنے سے اگرچے سفید ہوئے بالوں کا رنگ واپس نہ آئے مگر آپ اپنے بالوں کو مزید سفید ہونے سے بچا سکتے ہیں۔

.3

وٹامن بی-12 کا استعمال زیادہ کریں ۔

بالوں كی رنگت كے حوالے سے وٹامن بی-12 نہایت اہم ہے۔ اگر آپ اس وٹامن كی کمی کا شکار ہیں تو فوراً اس کا استعمال کریں۔ ڈاکٹر کے ساتھ رجوع کرنے سے آپ کو دو طرح كی وضاحت مل سکتی ہیں۔

 وٹامن بی-12 كی کمی دور کرنے كیلیے ڈاکٹر كے تجویز کردہ ٹیکے(انجیکشن) كے ذریعے۔

 ایسی غذاؤں کا استعمال جن میں وٹامن بی-12 وافر مقدار میں موجود ہو۔

وٹامن بی-12 بالوں كے قدرتی رنگ کو دوبارہ زندہ کرنے كی صلاحیت رکھتا ہے۔

.4 

ذہنی تناؤ کو کم کرنے كی کوشش کریں ۔

اگر آپ مسلسل ذہنی الجھنوں میں خود کو پاتے ہیں تو یہ رویّہ آپ كی ذہنی صحت كے ساتھ ساتھ آپ كے بالوں کو بھی متاثر کرتا ہے۔ لہذا اپنے آپ کو سکون كی کیفیات پر گامزن کرنے كی کوشش کریں۔ مثبت سوچ اپنانے کی کوشش کریں جو اچھے حیالات کو جنم دیتی ہے اور آپ كے ذہنی تناؤ کو رفع کرنے میں مدد دیتی ہے۔

.5 

نقصان دہ مصنوعات سے اجتناب کریں ۔

بلیچنگ ، کم معیاری شیمپو جیسی دیگر مصنوعات کو اپنے استعمال میں ہرگز نہ لائیں۔ وقتی طور پر ایسی مصنوعات كا کرشمہ ظاہر ہو سکتا ہے مگر دائمی طور پر یہ سفید بالوں کا باعث بن سکتی ہیں۔

 

سفید بالوں کا قدرتی گھریلوں علاج

سائنسی علاج جسے عام طور پر انگریزی علاج بھی کہا جاتا ہے، بے شک جدید تحقیقات كی بدولت آج عروج پر ہے مگر اس كے باوجود دیسی علاج بھی اپنی مثال آپ ہے۔ دیسی، قدرتی، گھریلوں علاج آج بھی اسی اہمیت كے حامل ہیں جیسے صدیوں پہلے عوام الناس میں رائج تھے۔

سفید بالوں سے چھٹکارا پانے كیلیے مقبول گھریلوں علاج مندرجہ ذیل ہیں۔

.1 

کالی چائے(دودھ کے بغیر کالی پتی کا قہوہ)۔

safed balon ko rokne ke leay kali chai se ilaj

بالوں كی سفیدی کو زائل کرنے كیلیے کالی چائے بہت مفیید اور آزمودہ ہے۔ کالی چائے میں اینٹی آکسیڈینٹ وافر مقدار میں پائے جاتے ہیں جو بالوں کو سفید ہونے سے روکتے ہیں۔ کالی چائے بالوں کو سیاہ کرنے كے ساتھ چمکدار اور نرم بھی بناتی ہے۔

استعمال کا طریقہ

4 کھانے كے چمچ کالی چائے کو 2 کپ پانی میں ڈال كے ابالیں یہاں تک كے اچھی طرح پاک جائے۔ اب اس تیار شدہ کہوے کو ٹھنڈا ہونے كے لیے رکھ دیں۔ جب کہوہ ٹھنڈا ہو جائے تو اسے گیلے بالوں میں اس طرح لگائیں كے بالوں كی جلد تک پہنچ جائے . چند منٹ كی مساج کرنے كے بعد بالوں کو ایک گھنٹے كے لیے کھلا چھوڑ دیں۔ وقت پورا ہونے كے بعد بالوں کو معیاری شیمپو كے ساتھ دھو لیں۔ آپ اس عمل کو ہفتے میں 2 سے 3 بار کر سکتے ہیں۔

.2 

ارنڈی کا تیل (کیسٹر آئل) ۔

safed balon ka caster oil se chutkara

ارنڈی كے تیل میں اومیگا-6 پایا جاتا ہے جو بالوں کی اصلی رنگت کو بر قرار رکھنے میں مدد کرتا ہے۔ ارنڈی كے تیل کی بیشمار خصوصیات ہیں کیونکہ یہ خون کی گردش کو بڑھاتا ہے۔

استعمال کا طریقہ

ارنڈی كے تیل كیساتھ سر کا مساج کریں یہاں تک كے آپ كے بالوں كی جلد میں اچھی طرح جذب ہونے لگے۔ آپ یہ عمل ہفتے میں 2-3 بار کر سکتے ہیں۔

.3 

کڑی پتے ۔

safed balon ke leay curry patty ka istemal

سفید بالوں کو روکنے كیلیے کڑی پتوں کا استعمال صدیوں پرانا علاج ہے۔ پاکستان اور بھارت جیسے ممالک میں کڑی پتے آسانی سے دیستیاب ہو سکتے ہیں۔

استعمال کا طریقہ

چار(4) چمچ ناریل کا تیل لیں (ناریل کا تیل بالوں كی جڑ تک آسانی سے پہنچ جاتا ہے جس کی وجہ سے بالوں كی پرورش اور ناشو نما کو بحال کرتا ہے)۔ اب ایک مٹھی بھر کڑی پتوں کو ناریل كے تیل میں ڈال کر ہلکی آنچ پر پکائیں یہاں تک كے پتوں کا عرق تیل میں اچھی طرح محلول ہو جائے۔ تیل کو ٹھنڈا ہونے كیلیے رکھ دیں اور جب تیل ٹھنڈا ہو جائے تو اسے چھان کر علیحدہ کر لیں۔ اب آپ چھانے ہوئے تیل کو انگلیوں كے سروں پر لگا کرسر کا کچھ منٹ تک مساج کریں اور ایک گھنٹے تک بالوں کو چھوڑ دیں۔  گھنٹے بعد بالوں کو کسی معیاری شیمپو سے دھو لیں۔ آپ یہ عمل ہفتے میں 2-3 بار کر سکتے ہیں۔

Read in roman Urdu / roman Hindi

khubsurti mai khalal paida karne k bohat se nukat ho sakte hain magar en sab wajohat ma aik wajah balon ka safed hona hai. Balon ki safed rangat ka zahir hona aik nihayat aham masla hai. Es maslay k peshay nazar app behat ilaj talash karne ki justaju ma gamzan hote hain magar baaz oqat app yeh jan,ny ki koshish ma k safed balo se chutkara kaise paye, bohat se aise ghalatia kar bethtay hain jo k na sirf balon ko kamzor, rokha or bejan bana daite hain balke balon ki sehat or nash-o-numa ke liay naguzeer ho sakte hain.
Kam umari ma balon ka safed hona aik mayoos kun sabab ha qu,ke burhape ma balon ka safed hona mamoli baat ha magar es ke baraks umar se pehlay baal safed hona pareshan ka sabab ban jate hain.

SAFED BAAL HONE KI WAJAH


Sehat mand balon ka enhisar en ki achi nash-o-numa par gamzan hota ha. Balon ki achi nash-o-numa qudarti tor par tabhi mumkin hoti ha jab balon ke purane khuliay (follicles) sar ki jild se zaeel hote hon aur en ki jhaga nae khuliay paida hon jo nae balon ko paida karne ma apna kirdar ada karte hain. Agar nae khulio k paida hone ka marhala kamzor ho to balon ma bohat se aham masael paida hona shuru ho jate hain. Amomi tor par bharti hue umar ke sath sath balon k nae khulio ke paidaesh bohat kam ho jati ha or aksar oqat khatam ho jati ha. Es wajah se balon ma moojod roghan (pigment) hatam hona shuru ho jata ha or yehi wajah balon k safed hone ka sabab banti ha.

Balon ma safedi aane ke wajah balon ma pae jane walay roghan ki kami ka waqia hona ha. Balon ma 2 tarha k roghan moojod hoty hain. Aik ghara (dark) jis ko eumelanin kaha jata ha or dousra halka (light) jise phaeomelanin kaha jata ha. Yeh dono roghan apas ma mil kar balon ko rangat dene ka kaam karte hain. Yehi wajah ha k jab balon ma pae janay walay en dono biyan karda roghan ma kami waqia hoti ha to baal safed hona shuru ho jate hain. Balon ma pae jane wale roghan ma kami ane ke sahi wajah abhi tak daryaft nhi ho saki magar es article ma hum app ko aise tarike batain gay jo safed balon ki kami ma munfarid sabit hon gay or balon ki safedi ko rokne ke salahiyat pa mabni hon gay.

Balon ma moojod roghan ko bahal karne k mukhtalif tarike hain magar yeh wajah par munhasir ha. Kabal-az-waqt safed balon ki aam wajohat yeh hain.

1. Jeeniyat (Genetics)
Kam umari ma balon ka safed hona es baat ki nishani bhe ho sakta ha k app ke walidain k baal be kam umari ma safed hona shuru ho gay thay. Agar app es baat par mutafiq hain to es ka matlab yeh ha k safed baal app ko jeeniat ke wajah se wirasat ma milay hain.
Agarchy aap jeeniat ko tabdeel nahi kar saktay magar app balon ko rangeen kar k apni pasand k mutabiq bana saktay hain.

2. Vitamin B-12 Ki Kami
Balon ki nash-o-numa or balon ki rangat k khawale se vitamin B-12 aham kirdar ada karta ha. Es k sath sath vitamin B-12 app k jism ko tawanai be fraham karta ha. Safed baal vitamin B-12 ke kami hone k sabab paida hone lagtay hain. Vitamin B-12 jism ma aik ghazai juz hone ka darja rakhta ha jo hoon k khulio ko sehat mand rakhne ka qirdar ada karta ha. Yeh vitamin jism k khulio ko oxygen fraham karne k sath sath balon ke khulio ko be oxygen fraham karta ha. Vitamin B-12 ki kami safed balon ke khas wajah sabit ho sakti ha.

3. Chemicals Ka Istemal
Bazar (market) ma destiyab saste shampoo aur balon ko rang karne walay masnooat aam tor par khatarnak chemicals se banae gay hotay hain. En ka istemal na sirf balon ki jild ma marz (infection) ka sabab ban sakta ha balke mustaqil tor par balon ko harab karne ma apna qirdar ada karta ha. Ayse chamicals par mabni rang aur shampoo kam waqat ma balon ko safed kr sakte hain.

4. Tambaku-Noshi
kam umari ma safed balon ki aik khas wajah tambaku noshi be ha. Aik research ke mutabik tambaku noshi 30 saal ki umar se pehlay balon ko safed karne ma masbat (+ve) sabit hote ha. Agarchy cigarette penay se khatarnak marz jaise amraz-e-qalab (Heart disease) ka khatra, phepro ka cancer (Lung cancer) waghyra janam letay hain magar en k sath sath balon ko be mutasir kartay hain. Tambaku noshi khoon ke nalio ko sukarne pe majbor karti ha jis se sharyano ma khoon ka bahao kam ho jata ha or es k natejay ma sehat mand khoon waqat par balon tak nahi pohanch pata jis se baal oxygen ki kami ka shikar hotay huay safed hona shuru ho jatay hain.

5. Tanao (Stress)
Agar app kisi na kisi wajah se zehni tanao ka shikar hain to aap k baal kadray waqat se pehlay safed hona shuru ho sakty hain. Tanao hone ki bhari wajuhat mandarja zail ho sakti hain:
a) Buland fishar-e-hoon (blood pressure) ke bemari.
b) Bhok ma tabdeli ana.
c) Kisi be qisam ke bechaini ka hona.
d) Neend ane ma dushwari.
Zehni tanao hone ke sabab balon ma moujod stem cells mutasir hona shuru ho jatay hain jis ke wajah se balon ma moujod roghan ban,ny ka amal ruk jata ha or baal safed hona shuru ho jatay hain.

6. Harmons Ma Adm Tawazun
Harmons ma tabdelio ka waqia hona balon k safed hone ko bharha sakta ha. Jadeed tehqeek k mutabiq harmons ma tabdelia ane ki wajah se jism ma melanin (balon or jild ma pae jane wala roghan) kam paida hone lagta ha. Melanin ki kami k baees balon ka safed hona wazia ha. Agar aap apne harmons k tawazun se bakhabar nahi hain to doctor se rajuo krain.

KIA SAFED BALON KO ROKA JA SAKTA HA?


Agar aap k baal safed hain aur app apne balon ko dubara siyah (Black) bana,na chahtay hain to ye masla mojoda halat par enhisar karta ha. Agar aap k baal jeeniat (genetics) ki wajah se safed ho rahy hain to aap en balon ko qadarti tor par dubara siyah nahi kar saktay.
Taham agar balon k safed hone ki koi aur wajah ha to beshak app safed balon se chutkara hasil kar sakte hain magar ess baat ke zamanat nahi de ja sakti k es amal ma aap ka kitna waqat darkar ho ga.

SAFED BAAL ROKNE KA TARIKA


Safed balon ki rok tham ke liay mandarja zail tariqay biyan keay ja rahe hain jo na sirf safed baal rokne ka tarika hain balke balon ki sehat ke liay be bohat mufeed hain.

1. Jism Ki Zaroori Madanyaat (Minerals) Ko Hasil Krain
Apni zaroori madanyaat ko barqarar rakhna balon ke liay bohat ahmiat ka hamil ha. Magnesium, Iron, Selenium, Zinc aur copper jese madanyaat ki kami ko pura karne aur mutawazun rakhne se safed balon ka ilaj kia ja sakta ha.

2. Tambaku Noshi Se Parhaiz Krain
Jesa k tambaku noshi safed balon ke liay mawan (effective) sabat hoti ha lehaza es se bachny ki koshish apna,ny aur es amal ko tarq karne se agarchy safed huay balon ka rang wapis na aye magr aap apne balon ko mazeed safed hone se bacha sakte hain.

3. Vitamin B-12 Ka Istimal Ziada Krain
Balon ki rangat k hawale se vitamin B-12 nihayat aham ha. Agr app es vitamin ki kami ka shikar hain to foran es ka istimal krain. Doctor ke sath rajuo karne se aap ko 2 trha ke wazahat mil sakti hain.
a) Vitamin B-12 ki kami dour karne k liay doctor k tajweez karda tekay (Injection) ke zariay.
b)  Aise ghazao ka estimal jin ma vitamin B-12 wafir miqdar ma moojod ho.
Vitamin B-12 balon ke qudarti rang ko dubara zinda karne ki slahiat rakhta ha.

4. Zehni Tanao Ko Kam Krne Ki Koshish Krain
Agar app musalsal zehni uljhano ma hud ko patay hain to yeh rawaiya app ki zehni sehat ke sath sath app ke balon ko be mutasir karta ha. Lehaza apne aap ko sakon ke kefiat par gamzan karne ke koshish krain. Masbat soch apnane ki koshish krain jo achay hayalat ko janm dete ha aur aap ke zehni tanao ko rafa karne ma madad deti ha.

5. Nuksan-Dah Masnoaat (Products) Se Ijtinab Krain
Bleaching, kam miyari shampoo jaise degar masnoaat ko apne istemal ma hargiz na lain. Waqti tor par aesi masnoaat ka karishma zahir ho sakta ha magar daemi tor par ye safed balon ka baees ban sakti hain.

SAFED BALON KA QUDARTI GHARELU ILAJ


Angrayzi (English) ilaj beshak jadeed tehkiqat ki badolat aaj arooj par ha magar es ke bawajod desi ilaj be apni misal aap ha. Desi, Qudarti, Gharelu ilaj aaj be usi ehmiat ke hamil hain jaise sadyon pehle awam-un-nas ma raeej thay.

Safed balon se chutkara pane ke liay maqbool gharelu ilaj mandarja zail hain.

1. Kali Chai (Dodh ke bagher kali pati ka kahwa)
Balon ki safedi ko zael karne ke liay kali chai boht mufeed aur aazmuda ha. Kali chai ma anti oxident wafir miqdar ma pae jate hain jo balon ko safed hone se roktay hain. Kali chai balon ko siyah karne ke sath chamakdar aur naram be banati hay.
Istimal ka tarika:
4 khane k chamach kali chai ko 2 cup pani ma dal kar ubalain yha tak k achi trha pak jae. Ab es tiyar shuda kahvay ko thanda hone k liay rakh dain. Jab kahva thanda ho jae to esy gelay balon ma es tarha lagain k balon ki jild tak pohanch jae. Chand mint ki misaj karne ke baad balon ko aik ghante ke liay khula chor dain. Waqat pura hone ke baad balon ko mayari shampoo k sath dho lain. Aap es amal ko hafte ma 2 se 3 bar kar sakte hain.

2. Arandi Ka Tel (Caster oil)
Arandi k tel ma omaga-6 paya jata ha jo balon ki asli rangat ko barqarar rakhne ma madad karta ha. Arandi k tel ki beshumar khasosiyat hain kyunke ye khoon ki gardish ko bharhata ha.
Istimal ka tarika:
Arandi k tel ke sath sar ka massaj krain yha tak k aap ke balon ki jild ma achi tarha jazab hone lagy. Aap yeh amal hafte ma 2-3 bar kar sakty hain.

3. Curri Patay
Safed balon ko rokne ke liay curry patto (leaves) ka istimal sadyoo purana ilaj ha. Pakistan aur bharat jese mumalik ma curry patay aasani se distyab ho sakte hain.
Istimal ka tarika:
4 chamach narial ka tel lain (narial ka tel balon ki jar tak aasani se pohanch jata ha jis ke wajah se baon ki parwarish aur nash-o-numa ko bahal karta ha). Ab aik muthi curry pato ki lay kar narial k tel ma dal kar halki anch par pakain yha tak k patto ka aarq tel ma achi tarha mehlool ho jae. Tel ko thanda hone k liay rakh dain or jab tel thanda ho jae to esay chaan kar elehda kr lain. Ab app chaane huay tel ko unglio ke siro par laga kr sar ka kuch mint tak massage krain aur aik ghante tak balon ko chor dain. Ghante baad balon ko kisi mayari shampoo se dho lain. Aap yeh amal hafte ma 2-3 bar kar sakty hain.